نماز جمعہ سے پہلے اور بعد میں مسجد کے دروازے پر فروخت کرنا

تحریر : فتاویٰ سعودی فتویٰ کمیٹی

60- نماز جمعہ سے پہلے اور بعد میں مسجد کے دروازے پر فروخت کرنا
مسجد کے باہر اس کے دروازے پر دوسری اذان سے پہلے سامان فروخت کرناجائز ہے لیکن دوسری اذان کے بعد جائز نہیں کیونکہ اس سے اللہ تعالیٰ نے منع کیا ہے۔ فرمان ربانی ہے:
يَا أَيُّهَا الَّذِينَ آمَنُوا إِذَا نُودِيَ لِلصَّلَاةِ مِن يَوْمِ الْجُمُعَةِ فَاسْعَوْا إِلَىٰ ذِكْرِ اللَّهِ وَذَرُوا الْبَيْعَ ۚ ذَٰلِكُمْ خَيْرٌ لَّكُمْ إِن كُنتُمْ تَعْلَمُونَ [الجمعة: 9]
اے لوگو جو ایمان لائے ہو ! جب جمعہ کے دن نماز کے لیے اذان دی جائے تواللہ کے ذکر کی طرف لپکو اور خرید و فروخت چھوڑ دو“
[اللجنة الدائمة: 15316]

یہ پوسٹ اپنے دوست احباب کیساتھ شئیر کریں

فیس بک
لنکڈان
ٹیلی گرام
وٹس اپ
ٹویٹر ایکس
پرنٹ کریں
ای میل