ایک رات کا اعتکاف کر سکتے ہیں؟

تحریر : حافظ فیض اللہ ناصر الْحَدِيثُ الثَّالِثُ: عَنْ عُمَرَ بْنِ الْخَطَّابِ رَضِيَ اللَّهُ عَنْهُ قَالَ: { قُلْتُ يَا رَسُولَ اللَّهِ ، إنِّي كُنْتُ نَذَرْتُ فِي الْجَاهِلِيَّةِ أَنْ أَعْتَكِفَ لَيْلَةً } - وَفِي رِوَايَةٍ: { يَوْمًا - فِي الْمَسْجِدِ الْحَرَامِ . قَالَ فَأَوْفِ بِنَذْرِكَ } وَلَمْ يَذْكُرْ بَعْضُ الرُّوَاةِ يَوْمًا وَلَا لَيْلَةً . سیدنا عمر بن خطاب رضی الله عنہ بیان کرتے ہیں کہ میں نے عرض کیا: اے اللہ کے رسول ! میں نے زمانہ جاہلیت میں نذر مانی تھی کہ میں ایک رات کا اعتکاف کروں گا ، ایک روایت میں ہے: مسجد حرام میں ایک دن کا (اعتکاف کروں گا ) آپ صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا: اپنی نذر پوری کر ۔ بعض راویوں نے دن اور رات کا ذکر نہیں کیا۔ شرح المفردات: الجَاهِلِيَّة: قبول اسلام سے قبل کا زمانہ ۔ الروَاةُ: یہ راوی کی جمع ہے۔ شرح…

Continue Readingایک رات کا اعتکاف کر سکتے ہیں؟

معتکف اگر مسجد سے باہر نکلےاس کا اعتکاف نہیں ٹوٹتا

تحریر : حافظ فیض اللہ ناصر الْحَدِيثُ الثَّانِي: عَنْ عَائِشَةَ رَضِيَ اللَّهُ عَنْهَا { أَنَّهَا كَانَتْ تُرَجِّلُ النَّبِيَّ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ وَهِيَ حَائِضٌ ، وَهُوَ مُعْتَكِفٌ فِي الْمَسْجِدِ . وَهِيَ فِي حُجْرَتِهَا: يُنَاوِلُهَا رَأْسَهُ . } وَفِي رِوَايَةٍ { وَكَانَ لَا يَدْخُلُ الْبَيْتَ إلَّا لِحَاجَةِ الْإِنْسَانِ } . وَفِي رِوَايَةٍ أَنَّ عَائِشَةَ رَضِيَ اللَّهُ عَنْهَا قَالَتْ " إنْ كُنْتُ لَأَدْخُلُ الْبَيْتَ لِلْحَاجَةِ وَالْمَرِيضُ فِيهِ . فَمَا أَسْأَلُ عَنْهُ إلَّا وَأَنَا مَارَّةٌ " . سیدہ عائشہ رضی اللہ عنہا روایت کرتی ہیں کہ وہ بحالتِ حیض نبی صلی اللہ علیہ وسلم کو اپنے حجرے میں ہی کنگھی کیا کرتی تھیں ، حالانکہ آپ صلی اللہ علیہ وسلم مسجد میں اعتکاف کیے ہوتے اور آپ صلی اللہ علیہ وسلم اپنا سر مبارک ان کے آگے کر دیتے۔ ایک روایت میں ہے: آپ صلی اللہ علیہ وسلم انسانی ضرورت کے علاوہ گھر نہیں آیا کرتے…

Continue Readingمعتکف اگر مسجد سے باہر نکلےاس کا اعتکاف نہیں ٹوٹتا

دن کے کس حصے میں جائے اعتکاف میں داخل ہوا جائے؟

تحریر : حافظ فیض اللہ ناصر بَابُ الْإِعْتِكَافِ اعتکاف کا بیان الْحَدِيثُ الْأَوَّلُ: عَنْ عَائِشَةَ رَضِيَ اللَّهُ عَنْهَا { أَنَّ رَسُولَ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ كَانَ يَعْتَكِفُ فِي الْعَشْرِ الْأَوَاخِرِ مِنْ رَمَضَانَ ، حَتَّى تَوَفَّاهُ اللَّهُ عَزَّ [ص: 425] وَجَلَّ . ثُمَّ اعْتَكَفَ أَزْوَاجُهُ بَعْدَهُ . } وَفِي لَفْظٍ { كَانَ رَسُولُ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ يَعْتَكِفُ فِي كُلِّ رَمَضَانَ . فَإِذَا صَلَّى الْغَدَاةَ جَاءَ مَكَانَهُ الَّذِي اعْتَكَفَ فِيهِ } . سیدہ عائشہ رضی اللہ عنہا روایت کرتی ہیں کہ رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم رمضان کے آخری عشرے میں اعتکاف فرمایا کرتے تھے، یہاں تک کہ اللہ تعالیٰ نے آپ صلی اللہ علیہ وسلم کو فوت کر دیا، پھر آپ صلی اللہ علیہ وسلم کے بعد آپ کی بیویاں اعتکاف کرنے لگیں۔ ایک روایت میں ہے: رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم ہر رمضان میں اعتکاف فرمایا کرتے تھے…

Continue Readingدن کے کس حصے میں جائے اعتکاف میں داخل ہوا جائے؟

لیلۃ القدر کو کن راتوں میں تلاش کرنا چاہیے؟

تحریر : حافظ فیض اللہ ناصر بَابُ لَيْلَةِ الْقَدْرِ شبِ قدر کا بیان الْحَدِيثُ الْأَوَّلُ: عَنْ عَبْدِ اللَّهِ بْنِ عُمَرَ رَضِيَ اللَّهُ عَنْهُمَا [ ص: 422] { أَنَّ رِجَالًا مِنْ أَصْحَابِ النَّبِيِّ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ أُرُوا لَيْلَةَ الْقَدْرِ فِي الْمَنَامِ فِي السَّبْعِ الْأَوَاخِرِ . فَقَالَ النَّبِيُّ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ: أَرَى رُؤْيَاكُمْ قَدْ تَوَاطَأَتْ فِي السَّبْعِ الْأَوَاخِرِ . فَمَنْ كَانَ مُتَحَرِّيهَا فَلْيَتَحَرَّهَا فِي السَّبْعِ الْأَوَاخِرِ } . سیدنا عبد اللہ بن عمر رضی اللہ عنہ روایت کرتے ہیں کہ نبی کریم صلی اللہ علیہ وسلم کے صحابہ میں سے کچھ لوگوں کو آخری سات راتوں میں خواب میں شب قدر دکھائی دی تو نبی صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا: میں دیکھ رہا ہوں کہ آخری سات راتوں کے معاملے میں تمھارا خواب (میرے خواب کے ) موافق ہے، سو جس نے اسے تلاش کرنا ہو تو اسے آخری سات راتوں میں…

Continue Readingلیلۃ القدر کو کن راتوں میں تلاش کرنا چاہیے؟

ایک سحری سے ایک سے زائد روزے رکھنا

تحریر : حافظ فیض اللہ ناصر سیدنا عبد اللہ بن عمر رضی اللہ عنہما بیان کرتے ہیں کہ رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم نے روزے ملانے سے منع فرمایا ہے ۔ صحابہ رضی اللہ عنہم نے عرض کیا: آپ صلی اللہ علیہ وسلم تو ملا لیتے ہیں۔ آپ صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا: میں تمھاری طرح کا تو نہیں ہوں ناں، مجھے تو کھلایا اور پلایا جاتا ہے۔ اسے ابوہریرہ، عائشہ اور انس بن مالک رضی اللہ عنہم نے بھی روایت کیا ہے ۔ (195) صحيح البخارى، كتاب الصوم، باب الوصال ومن قال ليس فى الليل صيام ، ح: 1964۔ صحیح مسلم ، کتاب الصيام، باب النهي عن الوصال في الصوم ، ح: 2618 . شرح المفردات: الوصال: ایک سحری سے ایک سے زائد روزے رکھنا، یعنی افطاری اور سحری کیے بغیر ہی اگلے دن کا روزہ رکھ لینا۔ شرح الحديث:…

Continue Readingایک سحری سے ایک سے زائد روزے رکھنا

عید کے دن روزہ رکھنا منع ہے

تحریر : حافظ فیض اللہ ناصر الْحَدِيثُ السَّادِسُ: عَنْ أَبِي عُبَيْدٍ مَوْلَى ابْنِ أَزْهَرَ وَاسْمُهُ سَعْدُ بْنُ عُبَيْدٍ - قَالَ { : شَهِدْت الْعِيدَ مَعَ عُمَرَ بْنِ الْخَطَّابِ رَضِيَ اللَّهُ عَنْهُ فَقَالَ هَذَانِ يَوْمَانِ نَهَى رَسُولُ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ عَنْ صِيَامِهِمَا: يَوْمُ فِطْرِكُمْ مِنْ صِيَامِكُمْ ، وَالْيَوْمُ الْآخَرُ: تَأْكُلُونَ فِيهِ مِنْ نُسُكِكُمْ . } ابن ازہر کے آزاد کردہ غلام ابوعبید سعد بن عبید بیان کرتے ہیں کہ عید کے روز سید نا عمر بن خطاب رضی اللہ عنہ کے ساتھ حاضر تھا کہ انھوں نے فرمایا: رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم ان دودنوں کا روزہ رکھنے سے منع فرمایا ہے، ایک تو تمھارے روزہ چھوڑنے کا یہ دن (یعنی عید الفطر) اور دوسرا وہ دن جس میں تم اپنی قربانیوں کا گوشت کھاتے ہو (یعنی عید الاضحٰی ) ۔ (202) صحيح البخارى، كتاب الصوم، باب الصوم يوم الفطر ،…

Continue Readingعید کے دن روزہ رکھنا منع ہے

نبی کریم ﷺ کی تین کاموں کی وصیت

تحریر : حافظ فیض اللہ ناصر الْحَدِيثُ الثَّالِثُ: عَنْ أَبِي هُرَيْرَةَ رَضِيَ اللَّهُ عَنْهُ قَالَ { أَوْصَانِي خَلِيلِي صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ بِثَلَاثٍ صِيَامِ ثَلَاثَةِ أَيَّامٍ مِنْ كُلِّ شَهْرٍ ، وَرَكْعَتَيْ الضُّحَى ، وَأَنْ أُوتِرَ قَبْلَ أَنْ أَنَامَ } . ابوہریرہ رضی اللہ عنہ بیان کرتے ہیں کہ میرے پیارے دوست صلی اللہ علیہ وسلم نے مجھے تین کاموں کی وصیت فرمائی: مہینے میں تین دِن روزہ رکھنے کی، چاشت کی دو رکعتیں پڑھنے کی اور سونے سے پہلے وتر ادا کرنے کی۔ (199) صحيح البخارى، كتاب الصوم، باب صيام أيام البيض ثلاث عشرة --- ، ح: 1981 - صحيح مسلم ، كتاب الصيام، باب استحباب صلوة الضحى وان أقلها ، ح: 721 . شرح المفردات: خليل: گہرا دوست، دِلی دوست جگری دوست۔ / واحد مذکرصفت مشبه ، باب نَصَرَ يَنْصُرُ ۔ شرح الحدیث: ایک روایت میں نبی مکرم صلی اللہ علیہ وسلم…

Continue Readingنبی کریم ﷺ کی تین کاموں کی وصیت

اللہ کی نظر میں محبوب ترین روزے کون سے ہیں؟

تحریر : حافظ فیض اللہ ناصر الْحَدِيثُ الثَّانِي: عَنْ عَبْدِ اللَّهِ بْنِ عَمْرِو بْنِ الْعَاصِ قَالَ قَالَ رَسُولُ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ { إنَّ أَحَبَّ الصِّيَامِ إلَى اللَّهِ صِيَامُ دَاوُد . وَأَحَبَّ الصَّلَاةِ إلَى اللَّهِ صَلَاةُ دَاوُد . كَانَ يَنَامُ نِصْفَ اللَّيْلِ ، وَيَقُومُ ثُلُثَهُ . وَيَنَامُ سُدُسَهُ . وَكَانَ يَصُومُ يَوْمًا وَيُفْطِرُ يَوْمًا . } سیدنا عبد اللہ بن عمرو بن عاص رضی اللہ عنہ بیان کرتے ہیں کہ رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا: اللہ تعالیٰ کے نزدیک سب سے بڑھ کر فضیلت کے روزے داؤد علیہ السلام کے روزے ہیں اور سب سے زیادہ پسندیدہ نماز بھی اللہ تعالیٰ کے ہاں داؤد علیہ السلام کی نماز ہے، وہ آدھی رات تک سویا کرتے تھے، تہائی رات قیام فرماتے اور رات کا چھٹا حصہ (پھر) سو جایا کرتے تھے۔ ایک دن روزہ رکھا کرتے تھے اور ایک دن…

Continue Readingاللہ کی نظر میں محبوب ترین روزے کون سے ہیں؟

جمعہ کے دن روزہ رکھنا منع ہے

تحریر : حافظ فیض اللہ ناصر الْحَدِيثُ الرَّابِعُ: عَنْ مُحَمَّدِ بْنِ عَبَّادِ بْنِ جَعْفَرٍ قَالَ: { سَأَلْتُ جَابِرَ بْنَ عَبْدِ اللَّهِ أَنَهَى النَّبِيُّ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ عَنْ صَوْمِ يَوْمِ الْجُمُعَةِ؟ قَالَ: نَعَمْ } وَزَادَ مُسْلِمٌ " وَرَبِّ الْكَعْبَةِ " . محمد بن عباد بن جعفر بیان کرتے ہیں کہ میں نے سیدنا جابر بن عبد اللہ رضی اللہ عنہ سے پوچھا: کیا نبی صلی اللہ علیہ وسلم نے جمعہ کے دن کا روزہ رکھنے سے منع فرمایا؟ انھوں نے کہا: جی ہاں۔ مسلم نے یہ اضافہ کیا ہے: ربِ کعبہ کی قسم! (آپ صلی اللہ علیہ وسلم نے منع فرمایا ہے)۔ (200) صحيح البخارى، كتاب الصوم، باب صوم يوم الجمعة ، ح: 198٤ ، 1985 - صحيح مسلم، كتاب الصيام، باب كراهة صيام يوم الجمعة منفرداً، ح: 1143، 1144 . شرح الحديث: اس سے مراد یہ ہے کہ وہ صرف جمعہ کے…

Continue Readingجمعہ کے دن روزہ رکھنا منع ہے

روزہ افطار کرنے کا صحیح وقت کون سا ہے؟

تحریر : حافظ فیض اللہ ناصر الْحَدِيثُ التَّاسِعُ: عَنْ سَهْلِ بْنِ سَعْدٍ السَّاعِدِيِّ رَضِيَ اللَّهُ عَنْهُ أَنَّ رَسُولَ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ قَالَ { لَا يَزَالُ النَّاسُ بِخَيْرٍ مَا عَجَّلُوا الْفِطْرَ . } سہل بن سعد ساعدی رضی اللہ عنہ سے مروی ہے کہ رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا: لوگ اس وقت تک ہمیشہ بھلائی میں رہیں گے جب تک وہ جلد افطاری کرتے رہیں گے۔ (193) صحيح البخاري ، كتاب الصوم ، باب تعجيل الافطار ، ح: 1957 - صحیح مسلم ، کتاب الصيام ، باب فضل السحور و تاکید استحبابه ۔ ، ح: 1098۔ شرح الحديث: سیدنا ابوہريرہ رضی اللہ عنہ نبی کریم صلی اللہ علیہ وسلم کا ایک فرمان نقل کرتے ہیں کہ ”اللہ تعالیٰ فرماتا ہے کہ میرے نزدیک میرے بندوں میں سے پسندیدہ ترین شخص وہ ہے جو ان سب سے جلد افطاری کرتا…

Continue Readingروزہ افطار کرنے کا صحیح وقت کون سا ہے؟

فوت ہونے والے کے روزے کون رکھے؟

تحریر : حافظ فیض اللہ ناصر الْحَدِيثُ السَّابِعُ: عَنْ عَائِشَةَ رَضِيَ اللَّهُ عَنْهَا: أَنَّ رَسُولَ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ قَالَ { مَنْ مَاتَ وَعَلَيْهِ صِيَامٌ صَامَ عَنْهُ وَلِيُّهُ } وَأَخْرَجَهُ أَبُو دَاوُد وَقَالَ " هَذَا فِي النَّذْرِ ، وَهُوَ قَوْلُ أَحْمَدَ بْنِ حَنْبَلٍ " . سیدہ عائشہ رضی اللہ عنہا سے مروی ہے کہ رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا: جو شخص اس حال میں فوت ہو جائے کہ اس کے ذمے روزے ہوں تو اس کی طرف سے اس کا ولی روزے رکھے۔ اسے امام ابوداؤد رحمۃ اللہ نے بھی بیان کیا ہے اورانہوں نے کہا: یہ (حکم) نذر (کے روزوں کے بارے) میں ہے اور یہی احمد بن حنبل رحمۃ اللہ کا قول ہے۔ (191) صحيح البخارى ، كتاب الصوم ، باب من مات وعليه صوم ، ح: 1952 - صحیح مسلم ، کتاب الصيام ، باب قضاء…

Continue Readingفوت ہونے والے کے روزے کون رکھے؟

روزوں کی قضا میں تاخیر کا بیان

تحریر : حافظ فیض اللہ ناصر الْحَدِيثُ السَّادِسُ: عَنْ عَائِشَةَ رَضِيَ اللَّهُ عَنْهَا قَالَتْ " كَانَ يَكُونُ عَلَيَّ الصَّوْمُ مِنْ رَمَضَانَ ، فَمَا أَسْتَطِيعُ أَنْ أَقْضِيَ إلَّا فِي شَعْبَانَ " . سیدہ عائشہ رضی اللہ عنہا بیان کرتی ہیں کہ میرے ذِمہ رمضان کے کچھ روزے ہوا کرتے تھے تو میں شعبان کے سوا کسی مہینے میں ان کی قضائی نہ دے پاتی تھی۔ (190) صحيح البخارى كتاب الصوم ، باب متى يقضى قضاء ر مضان ، ح: 1950 - صحیح مسلم ، کتاب الصيام ، باب قضاء ر مضان في شعبان ، ح: 1146 ۔ شرح الحدیث: اس حدیث میں رمضان کے روزوں کی قضا میں تاخیر کا بیان ہے اور ان کی قضا کی ادائیگی کا وقت وسیع ہے، جب بھی فراغت ہو دی جا سکتی ہے۔ البتہ شعبان سے مؤخر نہ کیا جائے کہ دوسرا رمضان ہی آپہنچے۔ [شرح عمدة…

Continue Readingروزوں کی قضا میں تاخیر کا بیان

سفر میں روزہ رکھنا کیسا ہے؟

تحریر : حافظ فیض اللہ ناصر بَابُ الصَّوْمِ فِى السَّفَرِ وَغَيْره سفر میں روزہ رکھنے کا بیان الْحَدِيثُ الْأَوَّلُ: عَنْ عَائِشَةَ - رَضِيَ اللَّهُ عَنْهَا - أَنَّ حَمْزَةَ بْنَ عَمْرٍو الْأَسْلَمِيَّ قَالَ لِلنَّبِيِّ - صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ -: أَأَصُومُ فِي السَّفَرِ؟ - وَكَانَ كَثِيرَ الصِّيَامِ - فَقَالَ: إنْ شِئْتَ فَصُمْ وَإِنْ شِئْتَ فَأَفْطِرْ . سیدہ عائشہ رضی اللہ عنہا روایت کرتی ہیں کہ حمزہ بن عمر واسلمی رضی اللہ عنہ کثرت سے روزے رکھنے والے شخص تھے ، انہوں نے نبی صلی اللہ علیہ وسلم سے کہا کیا میں سفر میں روزہ رکھ لیا کروں؟ تو آپ صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا: ”اگر تو چاہے تو روزہ رکھ لیا کر اور اگر چاہے تو چھوڑ دیا کر ۔“ صحيح البخاري ، كتاب الصوم، باب الصوم فى السفر والافطار ، ح: 1943 . صحيح مسلم ، كتاب الصيام، باب التخيير فى الصوم…

Continue Readingسفر میں روزہ رکھنا کیسا ہے؟

بحالت روزہ عمداً جماع کرنے والے پر کفارہ

تحریر : حافظ فیض اللہ ناصر الْحَدِيثُ السَّابِعُ: عَنْ أَبِي هُرَيْرَةَ - رَضِيَ اللَّهُ عَنْهُ - قَالَ بَيْنَمَا نَحْنُ جُلُوسٌ عِنْدَ النَّبِيِّ - صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ - إذْ جَاءَهُ رَجُلٌ. فَقَالَ: يَا رَسُولَ اللَّهِ، هَلَكْتُ. قَالَ: مَا أَهْلَكَكَ؟ قَالَ: وَقَعْتُ عَلَى امْرَأَتِي، وَأَنَا صَائِمٌ - وَفِي رِوَايَةٍ: أَصَبْتُ أَهْلِي فِي رَمَضَانَ - فَقَالَ رَسُولُ اللَّهِ - صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ -: هَلْ تَجِدُ رَقَبَةً تُعْتِقُهَا؟ قَالَ: لَا. قَالَ: فَهَلْ تَسْتَطِيعُ أَنْ تَصُومَ شَهْرَيْنِ مُتَتَابِعَيْنِ؟ قَالَ: لَا. قَالَ: فَهَلْ تَجِدُ إطْعَامَ سِتِّينَ مِسْكِينًا؟ قَالَ: لَا. قَالَ: فَمَكَثَ النَّبِيُّ - صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ - فَبَيْنَا نَحْنُ عَلَى ذَلِكَ أُتِيَ النَّبِيُّ - صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ - بِعَرَقٍ فِيهِ تَمْرٌ - وَالْعَرَقُ: الْمِكْتَلُ - قَالَ: أَيْنَ السَّائِلُ؟ قَالَ: أَنَا. قَالَ: خُذْ هَذَا، فَتَصَدَّقَ بِهِ. فَقَالَ الرَّجُلُ: عَلَى أَفْقَرَ مِنِّي: يَا رَسُولَ اللَّهِ؟ فَوَاَللَّهِ مَا بَيْنَ لَابَتَيْهَا - يُرِيدُ الْحَرَّتَيْنِ - أَهْلُ بَيْتٍ أَفْقَرَ مِنْ…

Continue Readingبحالت روزہ عمداً جماع کرنے والے پر کفارہ

End of content

No more pages to load